موصل کی بازیابی کے لیے کی گئی فوجی کارروائی میں 25ہزار دہشت گرد اور 400خود کش بمبار مارے گئے

بغداد:گزشتہ کئی سالوں سے دہشت گرد تنظیم دولت اسلامیہ فی العراق و الشام( داعش) کے زیر تسلط عراق کے سب سے بڑے شہر موصل کو عراقی فورسز نے پون لاکھ دہشت گردوں کو ہلاک کر کے مکمل آزاد کرا لیا ہے۔ موصل کئی سالوں سے دہشت گردوں کا مرکز بنا ہوا تھا عراقی فوج اور رضاکار فورس نے داعش کے مرکز پر کنٹرول حاصل کر کے دہشت گردوں کی کمر توڑ دی ہے۔
نینوا آپریشن کے کمانڈر عبدالامیر یاراللہ نے بتایا ہے کہ موصل کی آزادی کے لئے کئے جانے والے آپریشن میں دہشت گرد تنظیم داعش کے پچیس ہزار جنگجو ہلاک اور چار سو سے زائد خودکش حملہ آوروں کو سیکیورٹی فورسز نے نشانہ بنایا ہے جبکہ دہشت گردوں کی بائیس سو سے زائد گاڑیوں کو تباہ کیا گیا ہے جنہیں موصل کے مختلف علاقوں میں عراقی فورسز پر بم دھماکوں کے لئے تیار کیا گیا تھا۔
نینوا آپریشن کے کمانڈر نے مزید کہا ہے کہ اس آپریشن میں داعش کے ایک سو تیس سے زائد ڈرون طیاروں کو بھی تباہ کر دیا گیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ موصل کو دہشت گردوں سے آزاد کرانے کے لئے ایک لاکھ تیس ہزار سے زائد فوجیوں، پولیس اہلکاروں اور عوامی رضاکاروں نے حصہ لیا ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ صوبہ نینوا کی مکمل آزادی کے لئے آپریشن کا چوتھا اور آخری مرحلہ جلد شروع کر دیا جائے گا۔

Title: iraq 25000 daesh fighters were killed in mosul | In Category: دنیا  ( world )
Tags: , ,